Winter vacations announcement NCOC education institute 

Winter vacations announcement NCOC education institute 

The provincial minister for schools calls those who talk about holidays ignorant, the federal minister tweeted that holidays have been decided from December 25 to January 4, which will be officially announced tomorrow. The ministers agree on a holiday at the conference and then the NCOC decides whether or not the holidays will be at the end of January.

Winter vacations announcement NCOC education institute 

Here too the date has not been fixed. The state of uncertainty has been maintained that the entire nation is looking to these digital systems to decide when to go. Digital novices are unaware that many social routines, such as weddings and family gatherings, are associated with the winter holidays.

This is the worst form of inferiority complex that when power comes to hand, the society is tormented and reminded that this power should be considered as a razor. Or a double barrel gun. Wherever the mouth sighed.

Go ahead Corona vaccination process started in schools. The children started getting vaccinated. Now, five days later, it has been stopped. In other words, Allah is the owner of the children who got both up and down, if anything happened.

In these simple cases, if this is the world of ill-feeling, then in complicated matters, the government may be playing the role of Ruwit-e-Hilal Committee.

It is unknown at this time what he will do after leaving the post.

 

فیصلہ سازی کے عمل کی بدحواسی دیکھیے، جاڑے کی چھٹیوں کے سادے سے معاملے کو اس حکومت نے مسئلہ فیثا غورث بنا دیا.

صوبائی وزیربرائے سکولز چھٹیوں کی بات کرنے والوں کو ignorant کا لقب دیتا ہے، وفاقی وزیر ٹویٹ کر کے بتاتا ہے کہ پچیس دسمبر سے چار جنوری تک چھٹیوں کا فیصلہ ہواہے جس کاباضابطہ اعلان کل کیا جائے گا. وزراء کانفرنس میں چھٹیوں پر اتفاق ہو جاتا یے اور پھر این سی او سی میں فیصلہ ہوتا ہے کہ نہیں جی چھٹیاں تو جنوری کے اختتام پر ہوں گی.

یہاں بھی تاریخ کا تعین نہیں کیا گیا. غیر یقینی کی کیفیت برقرار رکھی گئی ہے کہ پوری قوم ان ڈیجیٹل نظام سقوں کی طرف دیکھتی رہے کہ جانے کب کیا فیصلہ ہو. ڈیجیٹل نونہالان کو معلوم ہی نہیں کہ معاشرے کے بہت سارے معمولات جیسے شادی بیاہ اور خاندانی تقاریب کا تعلق سردیوں کی تعطیلات کے ساتھ ہوتا ہے.

یہ احساس کمتری کی بد ترین شکل ہے کہ اقتدار ہاتھ آ جائے تو معاشرے کو ذہنی اذیت سے دوچار کر کر کے یاد  دلایاجائے کہ اس اقتدار کو استرا ہی سمجھا جاے ۔ .

آگے چلیے. سکولوں میں کرونا کی ویکسینیشن کا عمل شروع کا گیا. بچوں کو ویکسین لگنا شروع ہو گئی. اب پانچ دن بعد اس روک دیا گیا ہے کہ ابھی تو خسرہ کی ویکسین لگی ہے تو فورا کرونا کی ویکسینیشن مناسب نہیں. یعنی جن بچوں کو اوپر تلے دونوں لگ گئیں ان کا اللہ مالک ہے، اگر کچھ ہو گیا تو.

ان سادہ سے معاملات میں اگر بد حواسی کا عالم یہ ہے تو الجھے ہوئے معاملات میں تو حکومت رویت ہلال کمیٹی کاکردار ادا کر رہی ہو گی.
یعنی چن ہی چاڑ رہی ہو گی.

Leave a Reply